‏‎‎دم گفتار کہ اس لب پے مچلتی ہوئ بات
یاقوت کی سل چیر کے کوئ جھرنا ٹوٹے